اسرائیل نے غزہ جانے والی امدادی کشتی روک لی

کشتی میں سوار 12 افراد کو گرفتار کرلیا گیا (فوٹو: فائل)

کشتی میں سوار 12 افراد کو گرفتار کرلیا گیا (فوٹو: فائل)

اسرائیلی بحریہ نے محصورین غزہ کے لیے امداد لے جانے والی کشی کو روک کر اس میں سوار میڈیکل ٹیم سمیت عملے کے 12 ارکان کو گرفتار کرلیا۔

بین الاقوامی میڈیا رپورٹس کے مطابق سوئیڈن کی کشتی اہلِ غزہ کے لیے امداد لے کر محصور پٹی کی طرف رواں دواں تھی کہ اسرائیلی نیوی کے اہل کاروں نے اسے روک لیا۔ یہ کشتی اس اتحاد میں شامل تھی جس میں 4 امدادی بحری جہاز ڈنمارک سے مئی میں غزہ کے لیے روانہ ہوئے تھے۔

غیرملکی امدادی جہازوں کا یہ اتحاد غزہ کے بے آسرا عوام کو ضروریات زندگی اور ادویات پہنچانے کے لیے بنایا گیا ہے تاکہ 12 سال سے زائد عرصے سے محصورینِ غزہ کی مفلوج زندگی کو بحال کرنے میں مدد کی جاسکے۔

اسرائیلی فوج نے امدادی کشتی کو روکنے کے بعد اشہدود بندرگاہ منتقل کردیا اور امدادی سامان ضبط کرتے ہوئے میڈیکل ٹیم اور عملے کے 12 ارکان کو گرفتار کرلیا۔ اسرائیلی فوج کا کہنا ہے کہ گرفتار شدگان سے تفتیش کی جارہی ہے۔

You might also like