تبدیلی آئی کہ نہیں آئی ۔۔۔۔؟؟؟ تحریک انصاف نے شہری پر تشدد کرنے والے اپنے ایم پی اے کی رکنیت معطل کی یا نہیں ؟ ناقابل یقین خبر

اسلام آباد (ویب ڈیسک ) شہری پر تشدد کرنے کے معاملے پر پاکستان تحریک انصاف کے نو منتخب رکن اسمبلی کی رکنیت معطل ہونے کی خبر سامنے آئی تھی تاہم اب ترجمان پاکستان تحریک انصاف نے اس بات کی تردید کر دی ہے۔ تحریک انصاف کے ترجمان کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا

ڈاکٹر عمران علی شاہ کی رکنیت معطل نہیں کی گئی ۔ ڈاکٹر عمران علی شاہ کو اس معاملے پر جواب جمع کروانے پر ایک دن کی مہلت دی گئی ہے۔خیال رہے کہ اس سے قبل پاکستان تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی نجیب ہارون نے اپنے بیان میں کہا تھا کہ معاملے کی سنجیدگی کو دیکھتے ہوئے رکن اسمبلی ڈاکٹر عمران شاہ کی رکنیت ایک ماہ کے لیے معطل کی۔ پارٹی کی ڈسپلنری کمیٹی اس معاملے کو دیکھ رہی ہے۔شہری پر تشدد سے متعلق فیصلہ کمیٹی ہی کرے گی۔ یاد رہے کہ دو روز قبل سوشل میڈیا پر پاکستان تحریک انصاف کے نو منتخب رکن اسمبلی ڈاکٹر عمران شاہ کی ایک ویڈیو وائرل ہوئی تھی جس میں دیکھا گیا کہ پاکستان تحریک انصاف کے رکن صوبائی اسمبلی عمران شاہ کراچی کے علاقہ اسٹیڈیم روڈ پر شہری پر تشدد کررہے ہیں ۔یہ ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوتے ہی پاکستان تحریک انصاف کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا جانے لگا۔ سوشل میڈیا صارفین نے عمران علی شاہ کی حرکت کو اسٹیٹس کو اور پروٹوکول کی مخالفت کرنے والی پی ٹی آئی کے دوہرے معیار سے منسوب کیا۔پی ٹی آئی رہنما نے اپنے ایک ویڈیو پیغام میں ندامت کا اظہار کیا اور واضح کیا کے ذمہ دار شہری اور منتخب رکن سندھ اسمبلی ہونے کے ناطے ان پر شہریوں کی حفاظت کا ذمہ زیادہ ہے اس کے ساتھ ہی انہوں نے اس بات کو بھی واضح کیا کہ ویڈیو میں ادھوری حقیقت دکھائی گئی ۔انہوں نے شہری کو اس لیے مارا پیٹا کیونکہ اس نے ایک غریب موٹرسائیکل سوار کو بار بار اپنی گاڑی سے ٹکر ماری تھی۔معاملے پر احتجاج بڑھنے پر پاکستان تحریک انصاف کی قیادت نے رکن اسمبلی عمران علی شاہ کوشوکاز نوٹس جاری کردیا۔(ز،ط)

Source

You might also like