حکومت سازی؛ پی ٹی آئی نے بی این پی سے مدد مانگ لی

اختر مینگل نے عمران خان سے بنی گالا جاکر ملاقات سے انکارکر دیا، ذرائع ۔ فوٹو: فائل

اختر مینگل نے عمران خان سے بنی گالا جاکر ملاقات سے انکارکر دیا، ذرائع ۔ فوٹو: فائل

تحریک انصاف نے وفاق میں حکومت سازی کے لیے بلوچستان نیشنل پارٹی(مینگل) سے مدد مانگ لی جبکہ اختر مینگل نے بنی گالا جا کر عمران خان سے ملاقات کرنے سے انکار کر دیا۔

اسلام آباد میں نعیم الحق کی قیادت میں تحریک انصاف کے وفد نے اختر مینگل سے ملاقات کی جس میں انھیں عمران خان سے ملاقات کی دعوت دی گئی، ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو میں اختر مینگل نے کہا کہ اتحاد میں شمولیت کی دعوت پر تحریک انصاف کے وفد کے مشکور ہیں، پی ٹی آئی سے مثبت جواب ملا ہے، ہم نے تحریک انصاف کے سامنے بلوچستان کے مسائل رکھے، لاپتہ افراد کی بازیابی اورسی پیک پر عملدرآمد کا بھی مطالبہ کیا ہے، لہٰذا ہمیں مثبت جواب ملا تو ساتھ دینے کو تیار ہیں۔

اختر مینگل کا کہنا تھا کہ ہم اس ملک کے حکمرانوں کے جلے ہوئے ہیں اس لیے احتیاط کریں گے۔ ہمارے مطالبات پرکوئی پیشرفت نہیں ہوئی،لاپتہ افرادکی تعداد میں اضافہ ہوا، بلوچستان کی وزارت اعلیٰ سے متعلق سوال پر انھوں نے کہا کہ ایسا نہیں کہ کسی کو وزیراعلیٰ نامزدکر دیا جائے اور ہم آنکھیں بند کر کے حمایت کریں، جے یو آئی اتحادی ہے، حکومت یا اپوزیشن میں بیٹھنے کا فیصلہ مل کر کریں گے۔

اس موقع پر تحریک انصاف کے رہنما نعیم الحق نے مطالبات عمران خان کے سامنے رکھنے کی یقین دہانی کراتے ہوئے کہا کہ عمران خان پہلے لیڈر ہوں گے جو بلوچستان کے مسائل حل کریں گے۔

یار محمد رند نے کہا کہ اختر مینگل کے مطالبات عمران خان کے سامنے رکھیں گے، یقین ہے کہ عمران خان سے ملاقات کے بعد اختر مینگل کی جماعت اور ہم ساتھ چلیں گے۔

دوسری جانب ذرائع کا کہنا ہے کہ اختر مینگل نے عمران خان سے بنی گالا جاکر ملاقات سے انکارکر دیا، انھوں نے کہا کہ جسے ضرورت ہے وہ بلوچستان ہاؤس آکر انھیں ملے۔

ذرائع نے بتایا ہے کہ اختر مینگل کوگزشتہ روز جہانگیر ترین نے فون کرکے ملاقات کی دعوت دی تھی اور عمران خان کا آئندہ ایک دو روز میں اختر مینگل سے بلوچستان ہاؤس میں ملاقات کا امکان ہے۔

You might also like