سابق وزیر اعلیٰ مقبوضہ کشمیر کے گھر میں گھسنے والے کو گولی مار دی گئی

حملے کے وقت سابق وزیراعلیٰ فاروق عبداللہ گھر پر موجود نہیں تھے۔ فوٹو : فائل

حملے کے وقت سابق وزیراعلیٰ فاروق عبداللہ گھر پر موجود نہیں تھے۔ فوٹو : فائل

مقبوضہ کشمیر کے سابق وزیر اعلیٰ فاروق عبداللہ کے گھر میں زبردستی گھسنے والے کار سوار کو سیکیورٹی اہل کاروں نے گولی مار کر ہلاک کردیا۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق بھٹنڈی میں واقع سابق وزیر اعلیٰ فاروق عبداللہ کے گھر میں ایک شخص تیز رفتار کار سمیت زبردستی گھس آیا اور گھر میں توڑ پھوڑ کرنے لگا جس پر سیکیورٹی اہلکاروں کو طلب کیا گیا۔ سیکیورٹی اہلکاروں نے مشتعل شخص کو گولی مار کر ہلاک کردیا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ مشتعل کار سوار شخص کو فاروق عبداللہ کے بیڈ روم کی جانب بڑھتے ہوئے سیڑھیوں پر ہی گولی کا نشانہ بنایا گیا۔  مذکورہ شخص کی شناخت مرتاض کے نام سے ہوئی جو جموں کا رہائشی ہے۔ اس کے والد اسلحے کی فیکٹری کے مالک ہیں۔ واقعے کی وقت فاروق عبداللہ گھر میں موجود نہیں تھے۔

پولیس نے مزید تحقیقات کے لیے ملزم کے گھر پر چھاپہ مار کر والد اور بھائیوں کو حراست میں لے لیا، تفتیشی عمل جاری ہے تاحال ملزم کے اس اقدام کی وجہ معلوم نہیں ہوسکی۔

You might also like