شمالی کوریا کا جوہری پروگرام ابھی تک جاری ہے، اقوام متحدہ

شمالی کوریا نے امریکا سے معاہدے میں جوہری پروگرام کو تلف کرنے پر رضامندی کا اظہار کیا تھا (فوٹو : فائل، اے پی)

شمالی کوریا نے امریکا سے معاہدے میں جوہری پروگرام کو تلف کرنے پر رضامندی کا اظہار کیا تھا (فوٹو : فائل، اے پی)

اقوام متحدہ 

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق اقوام متحدہ نے بھی شمالی کوریا کے جوہری پروگرام کے خاتمے کے لیے کوششوں کو غیر سنجیدہ اور ناکافی قرار دے دیا۔ اقوام متحدہ کے ماہرین نے شمالی کوریا کے جوہری پروگرام کے جاری رہنے سے متعلق اقوام متحدہ کو اپنی رپورٹ پیش کردی ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ شمالی کوریا جوہری پروگرام کو تلف کرنے سے متعلق گمراہ کن خبریں پھیلا رہا ہے۔ تحقیقی ٹیم کو جوہری پروگرام بند کرنے کے ایسے ثبوت نہیں ملے جو شمالی کوریا کے دعووں کی تائید کرتے ہوں۔

قبل ازیں امریکی خفیہ اداروں نے بھی دعویٰ کیا تھا کہ شمالی کوریا نے امریکا سے کیے گئے معاہدے کے باوجود میزائل پروگرام کو جاری رکھا ہوا ہے اور اس حوالے سے شمالی کوریا کی اب تک کی کاوشیں درست سمت میں نہیں جس سے محسوس ہوتا ہے کہ شمالی کوریا معاہدے پر عمل درآمد سے گریز کر رہا ہے۔

واضح رہے کہ رواں برس 12 جون کو امریکی صدر ٹرمپ اور کم جونگ اُن کے درمیان تاریخی ملاقات میں شمالی کوریا نے اپنے جوہری منصوبوں کو تلف کرنے کی ہامی بھری تھی۔ عالمی برداری بھی شمالی کوریا کے جوہری اور میزائل پروگراموں کو علاقائی اور عالمی امن کے لیے خطرہ قرار دیتی ہے جب کہ سلامتی کونسل نے بھی شمالی کوریا پر پابندیاں عائد کر رکھی ہیں۔

You might also like