بوری میں بند ہوکر تین کلومیٹر تیرنے کا دلچسپ ریکارڈ قائم

یانے پیٹکوف نے خود بوری میں بند ہوکر تین کلومیٹر تک تیراکی کا نیا ریکارڈ بنایا ہے۔ فوٹو: بشکریہ ایم ایس این

یانے پیٹکوف نے خود بوری میں بند ہوکر تین کلومیٹر تک تیراکی کا نیا ریکارڈ بنایا ہے۔ فوٹو: بشکریہ ایم ایس این

بلغاریہ: بلغاریہ کے 64 سالہ لائف گارڈ، مہم جو اور تیراک یانے پیٹکوف نے بوری میں بند ہوکر تیر کر تین کلومیٹر سے زائد سفر کرکے ایک نیا عالمی ریکارڈ قائم کردیا ہے۔

یانے پیٹکوف نے پہلے اپنے ہاتھ اور پاؤں زنجیروں سے بندھوائے اور بوری پہنی جس کے بعد انہیں کھلی جھیل میں چھوڑدیا گیا۔ اس کا عملی مظاہرہ انہوں نے مقدونیہ کی مشہور اورد جھیل میں کیا اور ایک سرخ بوری میں بند ہوکر جھیل میں تیراکی کا کارنامہ انجام دیا۔

اس مظاہرے میں یانے پیٹکوف نے 3380 میٹر تک تیر کر بھارتی مچھیرے گوپال کھروی کا 2013 کا وہ ریکارڈ توڑا جو 3,071 میٹر کا تھا۔ اس موقع پر گنیز بک آف ورلڈ ریکارڈز کے آفیشل، ریڈکراس کے رضاکار اور آبی کھیلوں کے دیگر ماہرین بھی موجود تھے۔

اس کارنامے کے بعد یانے نے کہا کہ وہ ساڑھے تین کلومیٹریعنی 3500 میٹر تک تیرنا چاہتے تھے لیکن اتنے مشکل حالات میں تیرنے میں انہیں تین گھنٹے لگے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ بوری میں بند ہوکر روایتی انداز میں تیراکی بہت مشکل ہوجاتی ہے۔

You might also like